پاکستانی کرکٹ ٹیم عالمی ریکارڈ سے بال بال بچ گئی

پاکستانی کرکٹ ٹیم عالمی ریکارڈ سے بال بال بچ گئی

نیوزی لینڈ کے بالروں نے تیسرے ایک روزہ میچ میں پاکستانی کرکٹ ٹیم کا بھُرکس نکال دیا۔ پاکستان کے گیارہ میں سے سات کھلاڑی دس اسکور سے قبل ہی آؤٹ ہو گئے۔ تین کھلاڑیوں کو صفر کے اسکور پر آؤٹ کر دیا گیا۔

Cricket Fans mit neuseeländischer Flagge (Imago)

نیوزی لینڈ کے تیز بالر ٹرینٹ بُولٹ کی تباہ کُن بالنگ نے پاکستان کو تیسرے ایک روزہ میچ میں بھی شکست سے دوچار کر دیا۔ نیوزی لینڈ کے شہر ڈونیڈن میں آج تیرہ جنوری کو کھلیے جانے والے اس میچ میں صرف دو کے مجموعی اسکور پر تین کھلاڑی آؤٹ ہو گئے تھے۔ ان میں اظہر علی اور محمد حفیظ بغیر کوئی اسکور بنائے آؤٹ ہوئے۔

پاکستانی الیون میں سے سات کھلاڑی دوہرے ہندسے تک پہنچنے میں بھی ناکام رہے۔ صفر اسکور پر وکٹ گنوانے والوں میں شاداب خان بھی شامل ہیں۔ فخر زمان دو اور بابر اعظم آٹھ رنز بنا سکے۔ ان کے علاوہ حسن علی ایک، شعیب ملک تین اور فہیم اشرف دس رنز بنانے میں کامیاب رہے۔

پاکستان کے پہلے آٹھ کھلاڑی صرف بتیس کے مجموعی اسکور پر آؤٹ ہو گئے تھے اور امکان پیدا ہو گیا تھا کہ پاکستانی ٹیم کے نام ایک اور ورلڈ ریکاڈ آسکتا ہے لیکن کپتان سرفرار احمد (14ناٹ آؤٹ)، محمد عامر (14) اور رومان رئیس (16) کی قدرے بہتر بلے بازی سے یہ پاکستان اس ہزیمت سے بچ گیا۔ ان دو وکٹوں پر بیالیس رنز بنائے گئے۔

رومان رئیس سولہ اسکور بنا کر سب سے زیادہ اسکور کرنے والے بٹسمین رہے۔  تیسرے ایک روزہ میچ میں پاکستان کی جانب سے سب سے زیادہ رنز بنانے والے بیٹسمین رومان رئیس نے تین کھلاڑیوں کو آؤٹ بھی کیا۔

Welt T20 Cricket-Turnier zwischen Bangladesch und Neuseeland (Getty Images/AFP/D. Sarkar)نیوزی لینڈ کے کین ولیمسن تیسرے ایک روزہ میچ کے بھی ٹاپ اسکورر تھے

میزبان ٹیم کے تیز بالر ٹرینٹ بولٹ نے سترہ رنز دے کر پانچ وکٹیں حاصل کی۔ انہوں نے پاکستانی اننگز کے آغاز پر پانچ گیندوں پر تین کھلاڑیوں (اظہر علی، فخر زمان اور محمد حفیظ) کو آؤٹ کیا۔ فرگوسن اور مونرو نے دو دو وکٹیں حاصل کی۔

پاکستان کو ڈونیڈن میں کھیلے گئے میچ میں 183 رنز سے شکست ہوئی۔ اس طرح نیوزی لینڈ نے پانچ ایک روزہ میچوں کی یہ سیریز تین صفر سے جیت لی ہے۔ نیوزی لینڈ کے کپتان نے عمدہ گیند بازی اور شاندر بیٹنگ کو فتح کی بنیاد قرار دیا۔

میزبان ٹیم کے کپتان کین ولیمسن نے ٹاس جیت کر پہلے کھیلنے کا فیصلہ کیا اور ان کی ٹیم نے مقررہ پچاس اوورز میں 257 رنز بنائے۔ اس میں ولیممسن اور ٹیلر کی نصف سینچریاں بھی شامل تھیں

اپنا تبصرہ بھیجیں