71 سالہ کوملا 17 سالہ دولہا

فائل فوٹو

فائل فوٹو

یہ بات تو اکثر ہی سننے کو ملتی رہتی ہے کہ ‘پیار اندھا ہوتا ہے’، مگر آج ہم آپ کو جس کہانی کے بارے میں بتانے جارہے ہیں اسے پڑھنے کے بعد آپ کو یقین ہوجائے گا کہ یہ محاورہ کسی طور غلط نہیں۔

یہ کہانی ہے ایک 71 سالہ خاتون المیڈا ایرل کی جنہوں نے اپنے بیٹے کے جنازے میں ایک 17 سالہ نوجوان گیری ہارڈویک کو دیکھا اور اس سے شادی کرنے کا فیصلہ کیا۔

جہاں المیڈا کو یہ 17 سالہ نوجوان پسند آیا وہیں گیری بھی ضعیف العمر خاتون کی جانب راغب ہوا۔ گیری کو یہ خاتون اس لئے پسند آئیں کیونکہ جب وہ محض 8 سال کا تھا تو اپنی اسکول ٹیچر کو پسند کرتا تھا۔

364D32FD00000578-0-Almeda_knew_straight_away_that_Gary_was_the_man_for_her_after_bu-m-12_1468573416610

خاتون کا کہنا تھا کہ وہ اپنے سابقہ شوہر سے 43 سال سے شادی کے بندھن میں بندھی ہوئی تھیں۔ لیکن سال 2013 میں 7 ماہ تک ہسپتال میں شوگر اور دیگر بیماریوں سے لڑتے ہوئے اس کی موت ہوگئی۔ جس کے بعد میں کافی اداس رہنے لگ گئی یہاں تک کہ میرے ساتھ رہنے اور کام کرنے والے افراد بھی مجھ سے اس کی وجہ دریافت کرتے رہے۔

خاتون نے مزید کہا کہ میں کسی نوجوان کی تلاش میں نہیں تھی مگر جب میری نظر گیری پر پڑی تو فوراً سمجھ گئی کہ یہی وہ شخص ہے جسے میں تلاش کررہی ہوں۔

اس حوالے سے گیری کا کہنا ہے کہ ان کی شادی المیڈا ہے ہونا خواب سے بھی کچھ اوپر کی بات ہے۔ شادی سے قبل جب 71 سالہ خاتون نے گیری سے کہا کہ میں تم سے بہت بڑی ہوں میری عمر 71 سال اور تمہاری محض 17 ہے تو جواب میں، میں نے کہا کہ عمر صرف ایک نمبر ہے اور مجھے اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا۔

اب یہ جوڑا المیڈا کے 5 بیروم والے اپارٹمنٹ میں اپنی 40 سالہ بیٹی ڈیانا، 21 سالہ نواسے آرون اور 16 سالہ نواسی انڈیانا کے ساتھ خوشی خوشی رہتا ہے۔

Thanks to entertales

اپنا تبصرہ بھیجیں