ماریہ شراپوا پر بھارت میں جعلسازی کا مقدمہ

معروف ٹینس اسٹار ماریہ شراپوا پر بھارت میں جعلسازی کا مقدمہ

پانچ مرتبہ گرینڈ سلام جیتنے والی ٹینس کی روسی کھلاڑی ماریہ شراپوا کو بھارت میں اپنے خلاف جعلسازی کے ایک مقدے کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ بھارتی دارالحکومت نئی دہلی کی پولیس نے روسی ٹینس سٹار کے خلاف جعلسازی کا مقدمہ قائم کیا ہے۔
ماریہ شراپوا پر الزام ہے کہ انہوں نے رہائشی پراجیکٹ ’’بلٹ بائے شراپوا‘‘ کی تشہیری مہم میں حصہ لیا تھا جبکہ اس پراجیکٹ پر کبھی کام ہی شروع نہیں ہوا۔
واضح رہے کہ ۲۰۱۲ میں جب انہوں نے بھارت کا دورہ کیا تھا تو انہوں نے وہاں ایک نئے رہائشی کمپلیکس کا آغاز کیا تھا میں جس میں خریدار کو ایک شاندار مستقبل کے خواب دیکھاتے ہوئے کہا گیا تھا کہ یہاں پر انہیں ٹینس اکیڈمی کے ساتھ ساتھ کلب ہاوس اور ہیلی پیڈ بھی بنا کر دیا جائے گا۔
پراجیکٹ کی ویب سائٹ پر ماریہ شراپوا کا قول نقل کیا گیا جس میں انہوں نے کہا تھا کہ “وہ چاہتی ہیں یہاں کے رہنے والے اپنے آپ کو ایسا محسوس کریں کہ انہوں نے کوئی نایاب اور اعلی چیز کا انتخاب کیا ہے اور انہیں زندگی کی تمام سہولیات میسر ہوئی ہیں۔
واضح رہے کہ جب کوئی بھی نامور شخصیت کسی بھی کمپنی کی مصنوعات سے موسوم ہوتی ہے تو وہ اس کمپنی کا ایک طور پر ایجنٹ بن چکی ہوتی ہے لہذا مذکورہ بالا پراجیکٹ میں شائد ہی کوئی سرمایہ کاری کرتا اگر ٹینس اسٹار ماریہ شراپوا کا نام اس کے ساتھ نہ جڑا ہوتا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں