ہندواڑہ ، طیب مجید سپردخاک

زچلڈارہ ہندواڑہ میں سیکورٹی فورسز کے جھڑپ میں جاں بحق مقامی حزب المجاہدین سے وابستہ عسکریت پسندوں کی نما ز جنازہ میں ہزاروں کی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی جس دوران رقعت آمیز مناظر دیکھنے کو ملے۔ معلوم ہوا ہے کہ عسکریت پسندوں کے آبائی گائوں پلہالن پٹن اور براتھ کلان سوپور میں مختلف اضلاع سے آئے ہوئے لوگوں نے عسکریت پسندوں کی نماز جنازہ میں شرکت کی اور بعد میں انہیں پُر نم آنکھوں کے ساتھ سپرد خاک کیا گیا ۔ دریں اثنا مقامی عسکریت پسندوں کی یاد میں سوپور ، بارہ مولہ اور پٹن علاقوں میں مکمل ہڑتال سے معمولات زندگی ٹھپ ہو کر رہ گئیں اس دوران کسی بھی ناخوشگوار واقعے کو ٹالنے کیلئے ضلع بھر میں موبائیل انٹرنیٹ سروس کو منقطع کیا گیا ۔ جاں بحق مقامی عسکریت پسند طیب مجید میر ساکنہ براتھ کلان سوپور اور عاشق احمد بٹ ساکنہ پلہالن پٹن کی نعشیں گزشتہ شام ہی پولیس نے لواحقین کے سپرد کی جس دوران سوپور اور پلہالن پٹن میں ہزاروں کی تعداد میں لوگوں نے عسکریت پسندوں کی نعشوں کو کاندھوں پر اٹھا کر اسلام و آزادی کے حق میں نعرے بازی کی ۔ نمائندے کے مطابق پلہالن پٹن اور سوپور میں عسکریت پسندوں کی نماز جنازہ میں لوگوں کا ٹھاٹھیں مارتا ہوا سمندر دیکھنے کو ملا ۔ مقامی ذرائع نے بتایا کہ کپواڑہ ، سوپور ، بارہ مولہ ، بانڈی پورہ ، حاجن اور اُس کے ملحقہ علاقوں سے تعلق رکھنے والے لوگوں کی کثیر تعداد پلہالن پٹن اور سوپور پہنچنے میں کامیاب ہوئے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں