اداکاری کی وجہ سے سیاست میں ہوں،

بھارتی اطلاعات و نشریات کی وزیر و ماضی کی کامیاب ٹی وی اداکارہ سمرتی ایرانی نے اعتراف کیا ہے کہ وہ ٹی وی اور اداکاری کے باعث ہی آج سیاست میں ہیں۔خیال رہے کہ 41 سالہ سمرتی ایرانی سیاست میں آنے سے قبل ٹی وی کی معروف اداکارہ رہی ہیں۔ انہوں نے مشہور ڈرامہ ’کیوں کہ ساس بھی کبھی بہو تھی‘ سمیت کم سے کم 15 ٹی وی ڈراموں، تین فلموں اور متعدد تھیٹرز میں اداکاری کے جوہر دکھائے۔انہوں نے اداکاری کی شروعات 2000 سے کی تاہم انہیں شہرت 2007 سے ’کیوں کہ ساس بھی کبھی بہو تھی‘ میں کام کرنے کی وجہ سے ملی۔انہیں اداکاری کے باعث متعدد ٹی وی ایوارڈز بھی دئیے گئے۔ وہ ماضی میں مس انڈیا کے مقابلوں میں بھی شریک رہیں۔سمرتی ایرانی اس وقت ہندوستانی ریاست گجرات سے راجیہ سبھا کی رکن پارلیمنٹ ہیں۔ وہ ہندوستان کی اطلاعات و نشریات کی وزیر سمیت ٹیکسٹائل کی بھی وزیر ہیں۔سمرتی ایرانی نے انڈین ٹیلی وژن اکیڈمی ،آئی ٹی اےکی ایوارڈ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے اعتراف کیا کہ پروڈیوسر ایکتا کپور نے انہیں اپنی ٹیم کی مخالفت کے باوجود ’کیوں کہ ساس بھی کبھی بہو تھی‘ ڈرامے کے لئے منتخب کیا۔سمرتی ایرانی نے بتایا کہ ایکتا کپور کی ٹیم نے انہیں ڈرامے کے کردار کے لئے ناموزوں قرار دیا، جب کہ ان کے مقابلے کئی نوجوان لڑکیاں بھی آڈیشن دینے آئیں مگر ایکتا کپور نے پھر بھی انہیں چانس دیا۔ماضی کی اداکارہ نے کہاکہ انہوں نے 20 سالوں تک اداکاری کی،اسی وجہ سے وہ آج سیاست میں ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں