حل صرف ریاست کی مکمل آزادی و خودمختاری ہے۔لبریشن فرنٹ

 
 
راولپنڈی.. جموں وکشمیر لبریشن فرنٹ نے  ریاست جموں کشمیر کو ایک نا قابل ِ تقسیم وحدت  قرار دیتے ہوئے  اس کا مستقل ، پائیدار ، دیرپا اور انصاف پر مبنی حل صرف ریاست کی مکمل آزادی و خودمختاری قرار دیا ہے ۔ وادیٔ کشمیر ، جموں ، لداخ ، آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کی اکائیوں پر مشتمل آزاد مملکت ریاست جموں کشمیر کے وجودمیں آنے کے بعد اس کا اپنے تمام ہمسایہ ممالک بالخصوص ہندوستان اور پاکستان کے ساتھ دوستانہ و برادرانہ تعلقات ہوں گے۔ جموں کشمیر لبریشن فرنٹ کا ایک غیر رسمی مشاورتی اجلاس گذشتہ شب سنٹرل انفارمیشن آفس چاندنی چوک ، راولپنڈی میںمقبول بٹ شہید کے ہمراہی ، قائد ِ تحریک مرحوم امان اللہ خان کے دست ِ راست اور تنظیم کے سینئر وائس چیئرمین  عبدالحمید بٹ کی صدارت میں منعقد ہوا۔
 
 
 
اجلاس  میں پاس ہونے والی قرار داد  میں  قائد ِ انقلاب وچیئرمین لبریشن فرنٹ  محمد یاسین ملک اور مقبول بٹ شہید کے ہمراہی و سینئر وائس
چیئرمین لبریشن فرنٹ  عبدالحمید بٹ کی باصلاحیت اور مخلص قیادت پر مکمل اور غیر متزلزل اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے اُن کی ہر آواز پر لبیک کہنے کے فیصلے کا اعادہ کیا ۔شرکاء نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی طرف سے جاری ریاستی دہشت گردی کی مذمت کی اورآزادی پسند عوام کے حوصلے اور ہمت کو سراہتے ہوئے قابض قوتوں سے ریاست بھر سے انخلاء کا مطالبہ دہرایا۔  قرارداد میں آزاد کشمیر و گلگت بلتستان بھر میں عوام کے بنیادی حقوق پر ڈھاکہ مارنے والوں ، وسائل لوٹنے والوں کے خلاف اور ان حقوق اور وسائل کی بازیابی کے حق میں سیاسی جدوجہد میں تیزی لانے کی ضرورت پر زور دیا۔
 
 
 
 
 
 شرکاء  اجلاس نے مختلف تجاویز کی بنیاد پر سوشل میڈیا کے مثبت استعمال کے حوالے سے لبریشن فرنٹ کے کارکنان کے لئے نئی اور ٹھوس
پالیسی متعارف کرانے پر زور دیا تاکہ بے ہنگم اور غیر ضروری بحث و مباحثے سے بچا جائے ۔تاہم سوشل میڈیا کے منفی استعمال کے اثرات سے بچنے کے لئے سینئر وائس چیئرمین عبدالحمید بٹ نے تمام زونل صدور کو ہدایت دی کہ وہ اپنے اپنے زونز میں موجود غیر ضروری وہٹس اپ گروپس کو بند کرائیں ۔ علاوہ ازیں اپنی حد تک ہر سطح پر موجود کابینہ کی اجازت کے بغیر کو ئی الگ گروپ لانچ کرنے کی کسی کو اجازت نہ دینے اور سوشل میڈیا پر پارٹی کے انتظامی و حساس موضوعات پر لاحاصل بحث سے اجتناب کرنے اور نظم شکنی میں ملوث کارکنان کے خلاف فوری تادیبی کاروائی کرنے کی ہدایت دی۔
 
اجلاس میں سفارتی شعبے کی کاوشوں میں مذید سرعت لانے پر شرکاء نے زور دیا ۔ نئی اور زوردار سفارتی مہم کے ذریعے ریاست کی اصل صورتحال اقوام عالم تک اس کی اصل ہئیت میں پیش کرنے پر زور دیا گیا۔علاوہ ازیں شرکاء نے لبریشن فرنٹ کے سفارتی شعبے میں تمام زونز پر مشتمل ایک مشاورتی کونسل قائم کرنے کے فیصلے کی حمایت کی۔سنٹرل انفارمیشن آفس چاندنی چوک ، راولپنڈی میںمقبول بٹ شہید کے ہمراہی ، قائد ِ تحریک مرحوم امان اللہ خان کے دست ِ راست اور تنظیم کے سینئر وائس چیئرمین  عبدالحمید بٹ کی صدارت میں اجلاس کے اختتام پر برطانیہ زون، یورپ زون اور گلف زون سے تشریف لانے والے متعدد لیڈران کے اعزاز میں عشائیہ بھی دیا گیا۔
 
 
مشاورتی اجلاس اور عشائیے میں برطانیہ زون سے تعلق رکھنے والے لبریشن فرنٹ کے بزرگ اور سینئرترین لیڈر  اسلم مرزا  کے علاوہ وائس چیئر مین خواجہ سیف الدین ، وائس چیئرمین سلیم ہارون ، مرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل ساجد صدیقی ، مرکزی فائنانس سیکریٹری خواجہ منظور احمد چشتی ( الریاض ، سعودی عرب) ، صدر آزاد کشمیر گلگت بلتستان زون ڈاکٹر توقیرگیلانی ، صدر برطانیہ زون صابر گُل ، صدر گلف زون خالد کشمیری ، ممبر سپریم کونسل سردار زاہد حسین(بیلجیم، یورپ) ، ممبر سپریم کونسل سردار عبدالرحمان (کوٹلی آزاد کشمیر) ، ممبر سپریم کونسل منظور احمد خان (راولپنڈی)، سید تحسین گیلانی (جنرل سیکریٹری برطانیہ زون) ، راجہ طفیل عجائب (جنرل سیکریٹری گلگت بلتستان زون) ، سینئر رہنما سردار انور (یو اے ای)، جلیل فرید (چیئرمین اسٹوڈنٹس لبریشن فرنٹ) ، سہیل کٹاریہ (سینئر نائب صدر آزاد کشمیر گلگت بلتستان زون) ، سردار ایازاحمد (صدر یو اے ای، گلف زون) ،سابق اسٹوڈنٹس رہنما مسعودالحق (دبئی، ترجمان لبریشن فرنٹ یو اے ای) ، وسیم درانی (دمام ، سعودی عرب) ، ایڈوکیٹ توصیف جرال (آرگنائزر گلگت بلتستان زون) ،ملک لیاقت ( خزانچی گلگت بلتستان زون) ، زونل نائب صدر افضل بیگ ، زونل نائب صدر مرزا خورشیداحمد، سینئر رہنما و سابق زونل جنرل سیکریٹری سلیم بٹ ، سینئر رہنما آفتاب احمد ( میر پور)، یوسف چوہدری (چیئرمین ویلفئر کمیٹی گلگت بلتستان زون)، قاری نصیراحمد ( صدرضلع سدھنوتی) ، جہانگیراحمد مرزا ( صدرضلع باغ)، ایڈوکیٹ سعد انصاری ( صدرضلع میر پور) ، سینئر اسٹوڈنٹ لیڈر ملک عبدالرحیم ، سجاد احمد واسطی (ممبر ورکنگ کمیٹی برطانیہ زون) ، سینئر رہنما شہزاد گیلانی (کوٹلی)، سینئر طلباء رہنما اتفاق خالق (ہجیرہ) اور تراڈکھل سے تعلق رکھنے والے ملک طارق نے شرکت کی ۔