فواد چوہدری کا بھارت سے سفارتی تعلقات منقطع کرنے کا مطالبہ

اسلام آباد: وفاقی وزیربرائے سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے کہا ہے بھارت سے سفارتی تعلقات منقطع کرنے کا مطالبہ کر دیا۔ کل بھی کشمیر کیلئے کٹ مرے تھے اب بھی ایسا کرینگے۔ لڑیں گے مریں گے کشمیر کو فلسطین نہیں بننے دینگے۔ قومیں بے توقیری سے زندہ نہیں رہتی ہیں۔ پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے فواد چوہدری نے مزید کہا کہ سیاست کے پیچھے کشمیر کے حوالے سے نعشوں کی بے حرمتی نہ کی جائے۔ پارلیمنٹ سے بعض مواقع پر اچھا پیغام نہیں گیا۔ غلطی حکومت کی بھی ہو سکتی ہے۔ انہوں نے تقریرکے دوران یہ شعر بھی پڑھاکہ ”کج راواں انج وی اوکھیاں سن کج گل وچ غم دا طوق وی سی ”کج شہردے لوک وی ظالم سن کج سانوں مرن دا شوق وی سی”۔ وزیراعظم عمران خان نے جب گزشتہ روز ایوان میں بھارت پر حملے کی بات کی تو شہباز شریف اور بلاول بھٹو کو اٹھ کر کہنا چاہئے تھا۔ قدم بڑھاؤ عمران خان ہم تمہارے ساتھ ہیں۔ سر جھکا کر قوم نہیں جیتتی۔ جنگ کسی بے توقیری سے نہیں بچا سکتی۔ وزیراعظم اور وزیر خارجہ سے کہنا چاہتا ہوں۔ یقینا ہم نہیں کرنا چاہتے مگر یہ تاثر بھی نہ دیا جائے کہ ہم لڑنے سے بھاگ رہے ہیں۔ انہو ں نے کہاکہ عوام کا پیغام ایوان کو دینا چاہتا ہوں کہ بھارت جب بات نہیں کرنا چاہتا تو بھارتی سفیر پاکستان میں کیا کر رہا ہے۔ یہ فاشٹ بھارتی حکومت کا نمائندہ ہے۔ بھارتی سفیر کو واپس بھیجاجائے اور اپنے سفیر کو واپس بلوایا جائے۔ بھارت کے ساتھ سفارتی تعلقات منقطع کئے جائیں۔ لندن سے واشنگٹن اور ریاض سے تہران تک پیغام جانا چاہئے کہ پاک بھارت ممکنہ جنگ کی حدت دنیا کا ہر دارالحکومت محسوس کرے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں