ایون فیلڈ ریفرنس میں مریم نواز کا دوبارہ ٹرائل ہوگا،احتساب عدالت طلب

اسلام آباد : مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کی مشکلات بڑھنے لگیں احتساب عدالت ان کا ایون فیلڈ ریفرنس میں دوبارہ ٹرائل کرے گی.

اسلام آباد کی احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے ایون فیلڈ اپارٹمنٹس ریفرنس میں جعلی ٹرسٹ ڈیڈ جمع کروانے کے معاملہ پر نیب کی درخواست پر پاکستان مسلم لیگ (ن)کی نائب صدر مریم نواز شریف کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 19جولائی کو ذاتی حیثیت میں طلب کر لیا ہے ۔

نیب کی جانب سے دائر درخواست میں کہا گیا ہے کہ ایون فیلڈ ریفرنس میں مریم نواز کی جانب سے پیش کی گئی ٹرسٹ ڈیڈ جعلی ثابت ہوئی۔ نیب کی جانب سے درخواست میں کہا گیا کہ فیصلہ میں ٹرسٹ ڈیڈ جعلی ثابت ہونے پر مریم نواز کا الگ ٹرائل ہونا چاہئے ۔

واضح رہے کہ ایون فیلڈ اپارٹمنٹس کیس کی فرد جرم سے مریم نواز کے خلاف جعلی دستاویزات پیش کرنے کی سیکشن حذف کر دی گئی تھی اور کہا گیا تھا کہ اگر مقدمہ میں جعلی دستاویزات ثابت ہو گئیں تو پھر مریم نواز کے خلاف الگ ٹرائل ہو سکتا ہے۔

نیب نے جعلی دستاویزات کے کیس میں مریم نواز کے سمری ٹرائل کے لئے اسلام آباد کی احتساب عدالت میں الگ درخواست دائر کر دی جبکہ احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے نیب کی درخواست باقا عد ہ سماعت کے لئے منظور کر لی اور 19جولائی کو مریم نواز کو طلب کر لیا ۔

نیب کی جانب سے جمع کروائی گئی درخواست میں کہا گیا کہ ایون فیلڈ ریفرنس میں احتساب عدالت قرار دے چکی ہے کہ مریم نواز کی جانب سے جمع کروائی گئی ٹرست ڈیڈ جعلی تھی لہذا مریم نواز کے خلاف الگ سے ٹرائل کیا جائے

اپنا تبصرہ بھیجیں