داتادربار کے باہر دھماکہ، 8 افراد جاں بحق،24 زخمی، وزیراعظم کی مذمت

لاہور: پاکستان کے صوبہ پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں داتا دربار کے باہر سڑک پر دھماکا ہوا جس میں 8 افراد کے جاں بحق اور 24 سے زائد افراد زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں جن میں 5 پولیس اہلکار جبکہ 3 عام شہری شامل ہیں ۔وزیر اعظم پاکستان عمران خان نے داتا دربار لاہور میں دھماکے کی شدید مذمت کی ہے

داتا دربار کے باہر ایلیٹ فورس کی گاڑی کے قریب دھماکا ہوا اور بظاہر ایسا لگتا ہے کہ ایلیٹ فورس کی گاڑی کو نشانہ بنایا گیا۔
آئی جی پناجب نے دھماکہ کو پولیس کی گاڑی پر خود کش حملہ قراردیا ہے اور 8افرادکی ہلاکت کی تصدیق کی ہے،
پولیس اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکاروں سمیت ریسکیو اہلکار جائے وقوعہ پر پہنچ گئے اور سڑک کو ٹریفک کی آمد و رفت کے لیے معطل کردیا گیا۔

قبل ازیں لاہور کے ڈپٹی انسپکٹر جنرل پولیس اشفاق خان نے میڈیا کو بتایا تھا کہ داتا دربار پولیس وین دھماکہ میں تین اہلکار اور دو شہری ہلاک ہوئے۔

ڈی آئی جی اشفاق خان کے مطابق واقعہ میں 24 افراد زخمی بھی ہوئے ہیں ۔

پولیس حکام کے مطابق حملے میں داتا دربار کے وی آئی پی گیٹ کے سامنے کھڑے ایلیٹ فورس کے اہلکاروں کو نشانہ بنایا گیا ۔

دھماکے کے بعد میو اور جنرل اسپتال میں ایمرجنسی نافذ کرتے ہوئے فوری طور پر اضافی عملے کو طلب کرلیا گیا۔

میو اسپتال میں 3 افراد کی لاشیں اور 19 زخمیوں کو لایا گیا ہے، زخمیوں میں سے 4 کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔

جاں بحق ہونے والے ایک شخص کی شناخت سہیل کے نام سے کی گئی ہے جب کہ دوسرے کی شناخت نہیں ہوسکی، ڈاکٹروں کی بڑی تعداد اسپتال میں موجود ہے اور زخمیوں کو طبی امداد دی جارہی ہے۔

وزیر اعظم پاکستان عمران خان نے داتا دربار لاہور میں دھماکے کی شدید مذمت کی ہے ۔

وزیراعظم نے قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر گہرے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے واقعے کی رپورٹ طلب کر لی ہے ۔

وزیراعظم نے زخمیوں کو بہترین طبی امداد فراہم کرنے کی ہدایت بھی کی ہے

وزیر اعظم نے غم زدہ خاندانوں سے دلی اظہار ہمدردی کیا ہے اور زخمیوں کی جلد صحت یابی کی دعا کی ہے۔

وزیراعلی پنجاب کے دفتر سے جاری اعلامیہ کے مطابق وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی داتا دربار کے باہر پولیس موبائل کے نزدیک دھماکے کی شدید مذمت کی ہے ۔

وزیراعلیٰ نے انسپکٹر جنرل پولیس اور ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ سے رپورٹ طلب کرتے ہوئے واقعہ کی انکوائری کا حکم دیا ہے

وزیراعلیٰ نے دھماکے میں قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے جاں بحق افراد کے لواحقین سے دلی ہمدردی اور تعزیت کی ہے ۔

وزیراعلی پنجاب نے ہدایت کی ہے کہ دھماکے میں زخمی ہونے والے افراد کو علاج معالجے کی بہترین سہولتیں فراہم کی جائیں

اپنا تبصرہ بھیجیں